قرآن مجيد

سورۃ التكوير
اپنا مطلوبہ لفظ تلاش کیجئیے۔

[ترجمہ محمد جوناگڑھی][ترجمہ فتح محمد جالندھری][ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
نمبر آيات تفسیر

--
بِسْمِ اللَّـهِ الرَّحْمَـنِ الرَّحِيمِ﴿﴾
شروع کرتا ہوں اللہ تعالٰی کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم کرنے والا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

1
إِذَا الشَّمْسُ كُوِّرَتْ (1)
إذا الشمس كورت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
جب سورج لپیٹ لیا جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
جب سورج لپیٹ لیا جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
جب سورج لپیٹ دیا جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
تفسیر آیت نمبر 1,2,3,4,5,6,7,8,9,10,11,12,13,14

2
وَإِذَا النُّجُومُ انْكَدَرَتْ (2)
وإذا النجوم انكدرت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور جب ستارے بے نور ہو جائیں گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
جب تارے بےنور ہو جائیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور جب ستارے بے نور ہو جائیں گے ۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

3
وَإِذَا الْجِبَالُ سُيِّرَتْ (3)
وإذا الجبال سيرت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور جب پہاڑ چلائے جائیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور جب پہاڑ چلائے جائیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور جب پہاڑ چلائے جائیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

4
وَإِذَا الْعِشَارُ عُطِّلَتْ (4)
وإذا العشار عطلت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور جب دس ماه کی حاملہ اونٹنیاں چھوڑ دی جائیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور جب بیانے والی اونٹنیاں بےکار ہو جائیں گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور جب دس ماہ کی حاملہ اونٹنیاں بے کار چھوڑ دی جائیں گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

5
وَإِذَا الْوُحُوشُ حُشِرَتْ (5)
وإذا الوحوش حشرت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور جب وحشی جانور اکھٹے کیے جائیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور جب وحشی جانور جمع اکٹھے ہو جائیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور جب جنگلی جانور اکٹھے کیے جائیں گے ۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

6
وَإِذَا الْبِحَارُ سُجِّرَتْ (6)
وإذا البحار سجرت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور جب سمندر بھڑکائے جائیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور جب دریا آگ ہو جائیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور جب سمندر بھڑکائے جائیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

7
وَإِذَا النُّفُوسُ زُوِّجَتْ (7)
وإذا النفوس زوجت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور جب جانیں (جسموں سے) ملا دی جائیں گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور جب روحیں (بدنوں سے) ملا دی جائیں گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور جب جانیں ملائی جائیں گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

8
وَإِذَا الْمَوْءُودَةُ سُئِلَتْ (8)
وإذا الموءودة سئلت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور جب زنده گاڑی ہوئی لڑکی سے سوال کیا جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور جب لڑکی سے جو زندہ دفنا دی گئی ہو پوچھا جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور جب زندہ دفن کی گئی (لڑکی) سے پوچھا جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

9
بِأَيِّ ذَنْبٍ قُتِلَتْ (9)
بأي ذنب قتلت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
کہ کس گناه کی وجہ سے وه قتل کی گئی؟۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
کہ وہ کس گناہ پرماری گئی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
کہ وہ کس گناہ کے بدلے قتل کی گئی؟
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

10
وَإِذَا الصُّحُفُ نُشِرَتْ (10)
وإذا الصحف نشرت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور جب نامہٴ اعمال کھول دیئے جائیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور جب (عملوں کے) دفتر کھولے جائیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور جب اعمال نامے پھیلائے جائیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

11
وَإِذَا السَّمَاءُ كُشِطَتْ (11)
وإذا السماء كشطت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور جب آسمان کی کھال اتار لی جائے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور جب آسمانوں کی کھال کھینچ لی جائے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور جب آسمان کی کھال اتاری جائے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

12
وَإِذَا الْجَحِيمُ سُعِّرَتْ (12)
وإذا الجحيم سعرت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور جب جہنم بھڑکائی جائے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور جب دوزخ (کی آگ) بھڑکائی جائے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور جب جہنم بھڑکائی جائے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

13
وَإِذَا الْجَنَّةُ أُزْلِفَتْ (13)
وإذا الجنة أزلفت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور جب جنت نزدیک کر دی جائے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور بہشت جب قریب لائی جائے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور جب جنت قریب لائی جائے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

14
عَلِمَتْ نَفْسٌ مَا أَحْضَرَتْ (14)
علمت نفس ما أحضرت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
تو اس دن ہر شخص جان لے گا جو کچھ لے کر آیا ہوگا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
تب ہر شخص معلوم کر لے گا کہ وہ کیا لے کر آیا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
ہر جان، جان لے گی جو لے کر آئی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

15
فَلَا أُقْسِمُ بِالْخُنَّسِ (15)
فلا أقسم بالخنس۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
میں قسم کھاتا ہوں پیچھے ہٹنے والے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
ہم کو ان ستاروں کی قسم جو پیچھے ہٹ جاتے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
پس نہیں، میں قسم کھاتا ہوں ان (ستاروں) کی جو پیچھے ہٹنے والے ہیں !
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
تفسیر آیت نمبر 15,16,17,18,19,20

16
الْجَوَارِ الْكُنَّسِ (16)
الجوار الكنس۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
چلنے پھرنے والے چھپنے والے ستاروں کی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
(اور) جو سیر کرتے اور غائب ہو جاتے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
جو چلنے والے ہیں، چھپ جانے والے ہیں !
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

17
وَاللَّيْلِ إِذَا عَسْعَسَ (17)
والليل إذا عسعس۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور رات کی جب جانے لگے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور رات کی قسم جب ختم ہونے لگتی ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور رات کی جب وہ جانے لگتی ہے!
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

18
وَالصُّبْحِ إِذَا تَنَفَّسَ (18)
والصبح إذا تنفس۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور صبح کی جب چمکنے لگے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور صبح کی قسم جب نمودار ہوتی ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور صبح کی جب وہ سانس لیتی ہے!
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

19
إِنَّهُ لَقَوْلُ رَسُولٍ كَرِيمٍ (19)
إنه لقول رسول كريم۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
یقیناً یہ ایک بزرگ رسول کا کہا ہوا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
کہ بےشک یہ (قرآن) فرشتہٴ عالی مقام کی زبان کا پیغام ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
بے شک یہ یقینا ایک ایسے پیغام پہنچانے والے کاقول ہے جو بہت معزز ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

20
ذِي قُوَّةٍ عِنْدَ ذِي الْعَرْشِ مَكِينٍ (20)
ذي قوة عند ذي العرش مكين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
جو قوت واﻻ ہے، عرش والے (اللہ) کے نزدیک بلند مرتبہ ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
جو صاحب قوت مالک عرش کے ہاں اونچے درجے والا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
بڑی قوت والا ہے، عرش والے کے ہاں بہت مرتبے والا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

21
مُطَاعٍ ثَمَّ أَمِينٍ (21)
مطاع ثم أمين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
جس کی (آسمانوں میں) اطاعت کی جاتی ہے امین ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
سردار (اور) امانت دار ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
وہاں اس کی بات مانی جاتی ہے، امانت دار ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
تفسیر آیت نمبر 21,22,23,24,25,26,27,28,29

22
وَمَا صَاحِبُكُمْ بِمَجْنُونٍ (22)
وما صاحبكم بمجنون۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور تمہارا ساتھی دیوانہ نہیں ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور (مکے والو) تمہارے رفیق (یعنی محمدﷺ) دیوانے نہیں ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور تمھارا ساتھی ہرگز کوئی دیوانہ نہیں ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

23
وَلَقَدْ رَآهُ بِالْأُفُقِ الْمُبِينِ (23)
ولقد رآه بالأفق المبين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اس نے اس (فرشتے) کو آسمان کے کھلے کنارے پر دیکھا بھی ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
بےشک انہوں نے اس (فرشتے) کو (آسمان کے کھلے یعنی) مشرقی کنارے پر دیکھا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور بلاشبہ یقینا اس نے اس ( جبریل) کو ( آسمان کے) روشن کنارے پر دیکھا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

24
وَمَا هُوَ عَلَى الْغَيْبِ بِضَنِينٍ (24)
وما هو على الغيب بضنين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور یہ غیب کی باتوں کو بتلانے میں بخیل بھی نہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور وہ پوشیدہ باتوں (کے ظاہر کرنے) میں بخیل نہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور وہ غیب کی باتوں پر ہرگز بخل کرنے والا نہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

25
وَمَا هُوَ بِقَوْلِ شَيْطَانٍ رَجِيمٍ (25)
وما هو بقول شيطان رجيم۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور یہ قرآن شیطان مردود کا کلام نہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور یہ شیطان مردود کا کلام نہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور وہ ہرگز کسی مردود شیطان کا کلام نہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

26
فَأَيْنَ تَذْهَبُونَ (26)
فأين تذهبون۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
پھر تم کہاں جا رہے ہو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
پھر تم کدھر جا رہے ہو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
پھر تم کہاں جا رہے ہو؟
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

27
إِنْ هُوَ إِلَّا ذِكْرٌ لِلْعَالَمِينَ (27)
إن هو إلا ذكر للعالمين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
یہ تو تمام جہان والوں کے لئے نصیحت نامہ ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
یہ تو جہان کے لوگوں کے لیے نصیحت ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
یہ اس کے علاوہ کچھ نہیں کہ جہانوں کے لیے نصیحت ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

28
لِمَنْ شَاءَ مِنْكُمْ أَنْ يَسْتَقِيمَ (28)
لمن شاء منكم أن يستقيم۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
(بالخصوص) اس کے لئے جو تم میں سے سیدھی راه پر چلنا چاہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
(یعنی) اس کے لیے جو تم میں سے سیدھی چال چلنا چاہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اس کے لیے جو تم میں سے چاہے کہ سیدھا چلے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

29
وَمَا تَشَاءُونَ إِلَّا أَنْ يَشَاءَ اللَّهُ رَبُّ الْعَالَمِينَ (29)
وما تشاءون إلا أن يشاء الله رب العالمين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور تم بغیر پروردگار عالم کے چاہے کچھ نہیں چاه سکتے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور تم کچھ بھی نہیں چاہ سکتے مگر وہی جو خدائے رب العالمین چاہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور تم نہیں چاہتے مگر یہ کہ اللہ چاہے ، جو سب جہانوں کا رب ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔