قرآن مجيد

سورۃ الإنفطار
اپنا مطلوبہ لفظ تلاش کیجئیے۔

[ترجمہ محمد جوناگڑھی][ترجمہ فتح محمد جالندھری][ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
نمبر آيات تفسیر

--
بِسْمِ اللَّـهِ الرَّحْمَـنِ الرَّحِيمِ﴿﴾
شروع کرتا ہوں اللہ تعالٰی کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم کرنے والا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

1
إِذَا السَّمَاءُ انْفَطَرَتْ (1)
إذا السماء انفطرت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
جب آسمان پھٹ جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
جب آسمان پھٹ جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
جب آسمان پھٹ جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
تفسیر آیت نمبر 1,2,3,4,5,6,7,8,9,10,11,12

2
وَإِذَا الْكَوَاكِبُ انْتَثَرَتْ (2)
وإذا الكواكب انتثرت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور جب ستارے جھڑ جائیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور جب تارے جھڑ پڑیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور جب ستارے بکھر کر گر جائیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

3
وَإِذَا الْبِحَارُ فُجِّرَتْ (3)
وإذا البحار فجرت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور جب سمندر بہہ نکلیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور جب دریا بہہ (کر ایک دوسرے سے مل) جائیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور جب سمندر پھاڑ دیے جائیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

4
وَإِذَا الْقُبُورُ بُعْثِرَتْ (4)
وإذا القبور بعثرت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور جب قبریں (شق کر کے) اکھاڑ دی جائیں گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور جب قبریں اکھیڑ دی جائیں گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور جب قبریں الٹ دی جائیں گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

5
عَلِمَتْ نَفْسٌ مَا قَدَّمَتْ وَأَخَّرَتْ (5)
علمت نفس ما قدمت وأخرت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
(اس وقت) ہر شخص اپنے آگے بھیجے ہوئے اور پیچھے چھوڑے ہوئے (یعنی اگلے پچھلے اعمال) کو معلوم کر لے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
تب ہر شخص معلوم کرلے گا کہ اس نے آگے کیا بھیجا تھا اور پیچھے کیا چھوڑا تھا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
ہر شخص جان لے گا جو اس نے آگے بھیجا اور جو پیچھے چھوڑا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

6
يَا أَيُّهَا الْإِنْسَانُ مَا غَرَّكَ بِرَبِّكَ الْكَرِيمِ (6)
يا أيها الإنسان ما غرك بربك الكريم۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اے انسان! تجھے اپنے رب کریم سے کس چیز نے بہکایا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اے انسان تجھ کو اپنے پروردگار کرم گستر کے باب میں کس چیز نے دھوکا دیا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اے انسان! تجھے تیرے نہایت کرم والے رب کے متعلق کس چیز نے دھوکا دیا؟
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

7
الَّذِي خَلَقَكَ فَسَوَّاكَ فَعَدَلَكَ (7)
الذي خلقك فسواك فعدلك۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
جس (رب نے) تجھے پیدا کیا، پھر ٹھیک ٹھاک کیا، پھر (درست اور) برابر بنایا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
(وہی تو ہے) جس نے تجھے بنایا اور (تیرے اعضا کو) ٹھیک کیا اور (تیرے قامت کو) معتدل رکھا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
وہ جس نے تجھے پیدا کیا، پھر تجھے درست کیا، پھر تجھے برابر کیا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

8
فِي أَيِّ صُورَةٍ مَا شَاءَ رَكَّبَكَ (8)
في أي صورة ما شاء ركبك۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
جس صورت میں چاہا تجھے جوڑ دیا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور جس صورت میں چاہا تجھے جوڑ دیا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
جس صورت میں بھی اس نے چاہا تجھے جوڑ دیا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

9
كَلَّا بَلْ تُكَذِّبُونَ بِالدِّينِ (9)
كلا بل تكذبون بالدين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
ہرگز نہیں بلکہ تم تو جزا وسزا کے دن کو جھٹلاتے ہو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
مگر ہیہات تم لوگ جزا کو جھٹلاتے ہو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
ہرگز نہیں، بلکہ تم جزا کو جھٹلاتے ہو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

10
وَإِنَّ عَلَيْكُمْ لَحَافِظِينَ (10)
وإن عليكم لحافظين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
یقیناً تم پر نگہبان عزت والے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
حالانکہ تم پر نگہبان مقرر ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
حالانکہ بلاشبہ تم پر یقیناً نگہبان (مقرر) ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

11
كِرَامًا كَاتِبِينَ (11)
كراما كاتبين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
لکھنے والے مقرر ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
عالی قدر (تمہاری باتوں کے) لکھنے والے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
جو بہت عزت والے ہیں، لکھنے والے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

12
يَعْلَمُونَ مَا تَفْعَلُونَ (12)
يعلمون ما تفعلون۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
جو کچھ تم کرتے ہو وه جانتے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
جو تم کرتے ہو وہ اسے جانتے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
وہ جانتے ہیں جو تم کرتے ہو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

13
إِنَّ الْأَبْرَارَ لَفِي نَعِيمٍ (13)
إن الأبرار لفي نعيم۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
یقیناً نیک لوگ (جنت کے عیش و آرام اور) نعمتوں میں ہوں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
بے شک نیکوکار نعمتوں (کی بہشت) میں ہوں گے۔۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
بے شک نیک لوگ یقیناً بڑی نعمت میں ہوں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
تفسیر آیت نمبر 13,14,15,16,17,18,19

14
وَإِنَّ الْفُجَّارَ لَفِي جَحِيمٍ (14)
وإن الفجار لفي جحيم۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور یقیناً بدکار لوگ دوزخ میں ہوں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور بدکردار دوزخ میں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور بے شک نافرمان لوگ یقیناً بھڑکتی آگ میں ہوں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

15
يَصْلَوْنَهَا يَوْمَ الدِّينِ (15)
يصلونها يوم الدين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
بدلے والے دن اس میں جائیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
(یعنی) جزا کے دن اس میں داخل ہوں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
وہ اس میں جزا کے دن داخل ہوں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

16
وَمَا هُمْ عَنْهَا بِغَائِبِينَ (16)
وما هم عنها بغائبين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
وه اس سے کبھی غائب نہ ہونے پائیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور اس سے چھپ نہیں سکیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور وہ اس سے کبھی غائب ہونے والے نہیں ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

17
وَمَا أَدْرَاكَ مَا يَوْمُ الدِّينِ (17)
وما أدراك ما يوم الدين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
تجھے کچھ خبر بھی ہے کہ بدلے کا دن کیا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور تمہیں کیا معلوم کہ جزا کا دن کیسا ہے؟۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور تجھے کس چیز نے معلوم کروایا کہ جزا کا دن کیا ہے؟
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

18
ثُمَّ مَا أَدْرَاكَ مَا يَوْمُ الدِّينِ (18)
ثم ما أدراك ما يوم الدين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
میں پھر (کہتا ہوں کہ) تجھے کیا معلوم کہ جزا (اور سزا) کا دن کیا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
پھر تمہیں کیا معلوم کہ جزا کا دن کیسا ہے؟۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
پھر تجھے کس چیز نے معلوم کروایا کہ جزا کا دن کیا ہے؟
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

19
يَوْمَ لَا تَمْلِكُ نَفْسٌ لِنَفْسٍ شَيْئًا وَالْأَمْرُ يَوْمَئِذٍ لِلَّهِ (19)
يوم لا تملك نفس لنفس شيئا والأمر يومئذ لله۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
(وه ہے) جس دن کوئی شخص کسی شخص کے لئے کسی چیز کا مختار نہ ہوگا، اور (تمام تر) احکام اس روز اللہ کے ہی ہوں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
جس روز کوئی کسی کا بھلا نہ کر سکے گا اور حکم اس روز خدا ہی کا ہو گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
جس دن کوئی جان کسی جان کے لیے کسی چیز کا اختیار نہ رکھے گی اور اس دن حکم صرف اللہ کا ہوگا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔