قرآن مجيد

سورۃ البلد
اپنا مطلوبہ لفظ تلاش کیجئیے۔

[ترجمہ محمد جوناگڑھی][ترجمہ فتح محمد جالندھری][ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
نمبر آيات تفسیر

--
بِسْمِ اللَّـهِ الرَّحْمَـنِ الرَّحِيمِ﴿﴾
شروع کرتا ہوں اللہ تعالٰی کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم کرنے والا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

1
لَا أُقْسِمُ بِهَذَا الْبَلَدِ (1)
لا أقسم بهذا البلد۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
میں اس شہر کی قسم کھاتا ہوں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
ہمیں اس شہر (مکہ) کی قسم۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
نہیں، میں اس شہر کی قسم کھاتا ہوں!
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
تفسیر آیت نمبر 1,2,3,4,5,6,7,8,9,10

2
وَأَنْتَ حِلٌّ بِهَذَا الْبَلَدِ (2)
وأنت حل بهذا البلد۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور آپ اس شہر میں مقیم ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور تم اسی شہر میں تو رہتے ہو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور تو اس شہر میں رہنے والا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

3
وَوَالِدٍ وَمَا وَلَدَ (3)
ووالد وما ولد۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور (قسم ہے) انسانی باپ اور اوﻻد کی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور باپ (یعنی آدم) اور اس کی اولاد کی قسم۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور جننے والے کی قسم! اور اس کی جو اس نے جنا!
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

4
لَقَدْ خَلَقْنَا الْإِنْسَانَ فِي كَبَدٍ (4)
لقد خلقنا الإنسان في كبد۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
یقیناً ہم نے انسان کو (بڑی) مشقت میں پیدا کیا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
کہ ہم نے انسان کو تکلیف (کی حالت) میں (رہنے والا) بنایا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
بلاشبہ یقینا ہم نے انسان کو بڑی مشقت میں پیدا کیا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

5
أَيَحْسَبُ أَنْ لَنْ يَقْدِرَ عَلَيْهِ أَحَدٌ (5)
أيحسب أن لن يقدر عليه أحد۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
کیا یہ گمان کرتا ہے کہ یہ کسی کے بس میں ہی نہیں؟۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
کیا وہ خیال رکھتا ہے کہ اس پر کوئی قابو نہ پائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
کیا وہ خیال کرتا ہے کہ اس پر کبھی کوئی قادر نہیں ہوگا؟
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

6
يَقُولُ أَهْلَكْتُ مَالًا لُبَدًا (6)
يقول أهلكت مالا لبدا۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
کہتا (پھرتا) ہے کہ میں نے تو بہت کچھ مال خرچ کر ڈاﻻ۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
کہتا ہے کہ میں نے بہت سا مال برباد کیا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
کہتا ہے میں نے ڈھیروں مال برباد کر ڈالا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

7
أَيَحْسَبُ أَنْ لَمْ يَرَهُ أَحَدٌ (7)
أيحسب أن لم يره أحد۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
کیا (یوں) سمجھتا ہے کہ کسی نے اسے دیکھا (ہی) نہیں؟۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
کیا اسے یہ گمان ہے کہ اس کو کسی نے دیکھا نہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
کیا وہ خیال کرتا ہے کہ اسے کسی نے نہیں دیکھا؟
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

8
أَلَمْ نَجْعَلْ لَهُ عَيْنَيْنِ (8)
ألم نجعل له عينين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
کیا ہم نے اس کی دو آنکھیں نہیں بنائیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
بھلا ہم نےاس کو دو آنکھیں نہیں دیں؟۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
کیا ہم نے اس کے لیے دو آنکھیں نہیں بنائیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

9
وَلِسَانًا وَشَفَتَيْنِ (9)
ولسانا وشفتين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور زبان اور ہونٹ (نہیں بنائے)۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور زبان اور دو ہونٹ (نہیں دیئے)۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور ایک زبان اور دو ہونٹ۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

10
وَهَدَيْنَاهُ النَّجْدَيْنِ (10)
وهديناه النجدين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
ہم نے دکھا دیئے اس کو دونوں راستے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
(یہ چیزیں بھی دیں) اور اس کو (خیر و شر کے) دونوں رستے بھی دکھا دیئے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور ہم نے اسے دو واضح راستے دکھا دیے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

11
فَلَا اقْتَحَمَ الْعَقَبَةَ (11)
فلا اقتحم العقبة۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
سو اس سے نہ ہو سکا کہ گھاٹی میں داخل ہوتا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
مگر وہ گھاٹی پر سے ہو کر نہ گزرا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
پھر (بھی) وہ مشکل گھاٹی میں نہ گھسا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
تفسیر آیت نمبر 11,12,13,14,15,16,17,18,19,20

12
وَمَا أَدْرَاكَ مَا الْعَقَبَةُ (12)
وما أدراك ما العقبة۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور کیا سمجھا کہ گھاٹی ہے کیا؟۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور تم کیا سمجھے کہ گھاٹی کیا ہے؟۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور تجھے کس چیز نے معلوم کروایا کہ وہ مشکل گھاٹی کیا ہے؟
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

13
فَكُّ رَقَبَةٍ (13)
فك رقبة۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
کسی گردن (غلام لونڈی) کو آزاد کرنا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
کسی (کی) گردن کا چھڑانا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
(وہ) گردن چھڑانا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

14
أَوْ إِطْعَامٌ فِي يَوْمٍ ذِي مَسْغَبَةٍ (14)
أو إطعام في يوم ذي مسغبة۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
یا بھوک والے دن کھانا کھلانا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
یا بھوک کے دن کھانا کھلانا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
یا کسی بھوک والے دن میں کھانا کھلانا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

15
يَتِيمًا ذَا مَقْرَبَةٍ (15)
يتيما ذا مقربة۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
کسی رشتہ دار یتیم کو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
یتیم رشتہ دار کو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
کسی قرابت والے یتیم کو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

16
أَوْ مِسْكِينًا ذَا مَتْرَبَةٍ (16)
أو مسكينا ذا متربة۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
یا خاکسار مسکین کو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
یا فقیر خاکسار کو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
یا مٹی میں ملے ہوئے کسی مسکین کو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

17
ثُمَّ كَانَ مِنَ الَّذِينَ آمَنُوا وَتَوَاصَوْا بِالصَّبْرِ وَتَوَاصَوْا بِالْمَرْحَمَةِ (17)
ثم كان من الذين آمنوا وتواصوا بالصبر وتواصوا بالمرحمة۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
پھر ان لوگوں میں سے ہو جاتا جو ایمان ﻻتے اور ایک دوسرے کو صبر کی اور رحم کرنے کی وصیت کرتے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
پھر ان لوگوں میں بھی (داخل) ہو جو ایمان لائے اور صبر کی نصیحت اور (لوگوں پر) شفقت کرنے کی وصیت کرتے رہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
پھر (یہ کہ) ہو وہ ان لوگوں میں سے جو ایمان لائے اور جنھوں نے ایک دوسرے کو صبر کی وصیت کی اور ایک دوسرے کو رحم کرنے کی وصیت کی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

18
أُولَئِكَ أَصْحَابُ الْمَيْمَنَةِ (18)
أولئك أصحاب الميمنة۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
یہی لوگ ہیں دائیں بازو والے (خوش بختی والے)۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
یہی لوگ صاحب سعادت ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
یہی لوگ دائیں ہاتھ والے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

19
وَالَّذِينَ كَفَرُوا بِآيَاتِنَا هُمْ أَصْحَابُ الْمَشْأَمَةِ (19)
والذين كفروا بآياتنا هم أصحاب المشأمة۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور جن لوگوں نے ہماری آیتوں کے ساتھ کفر کیا یہ کم بختی والے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور جنہوں نے ہماری آیتوں کو نہ مانا وہ بدبخت ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور جن لوگوں نے ہماری آیات کا انکار کیا وہی بائیں ہاتھ والے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

20
عَلَيْهِمْ نَارٌ مُؤْصَدَةٌ (20)
عليهم نار مؤصدة۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
انہی پر آگ ہوگی جو چاروں طرف سے گھیری ہوئی ہوگی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
یہ لوگ آگ میں بند کر دیئے جائیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
ان پر (ہر طرف سے) آگ بند کی ہوئی ہوگی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔