قرآن مجيد

سورۃ الشمس
اپنا مطلوبہ لفظ تلاش کیجئیے۔

[ترجمہ محمد جوناگڑھی][ترجمہ فتح محمد جالندھری][ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
نمبر آيات تفسیر

--
بِسْمِ اللَّـهِ الرَّحْمَـنِ الرَّحِيمِ﴿﴾
شروع کرتا ہوں اللہ تعالٰی کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم کرنے والا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

1
وَالشَّمْسِ وَضُحَاهَا (1)
والشمس وضحاها۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
قسم ہے سورج کی اور اس کی دھوپ کی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
سورج کی قسم اور اس کی روشنی کی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
قسم ہے سورج کی! اور اس کی دھوپ کی!
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
تفسیر آیت نمبر 1,2,3,4,5,6,7,8,9,10,11

2
وَالْقَمَرِ إِذَا تَلَاهَا (2)
والقمر إذا تلاها۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
قسم ہے چاند کی جب اس کے پیچھے آئے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور چاند کی جب اس کے پیچھے نکلے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور چاند کی جب وہ اس کے پیچھے آئے!
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

3
وَالنَّهَارِ إِذَا جَلَّاهَا (3)
والنهار إذا جلاها۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
قسم ہے دن کی جب سورج کو نمایاں کرے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور دن کی جب اُسے چمکا دے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور دن کی جب وہ اس ( سورج) کو ظاہر کر دے!
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

4
وَاللَّيْلِ إِذَا يَغْشَاهَا (4)
والليل إذا يغشاها۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
قسم ہے رات کی جب اسے ڈھانﭗ لے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور رات کی جب اُسے چھپا لے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور رات کی جب وہ اس ( سورج) کو ڈھانپ لے!
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

5
وَالسَّمَاءِ وَمَا بَنَاهَا (5)
والسماء وما بناها۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
قسم ہے آسمان کی اور اس کے بنانے کی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور آسمان کی اور اس ذات کی جس نے اسے بنایا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور آسمان کی اور اس ذات کی جس نے اسے بنایا !
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

6
وَالْأَرْضِ وَمَا طَحَاهَا (6)
والأرض وما طحاها۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
قسم ہے زمین کی اور اسے ہموار کرنے کی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور زمین کی اور اس کی جس نے اسے پھیلایا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور زمین کی اور اس ذات کی جس نے اسے بچھایا !
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

7
وَنَفْسٍ وَمَا سَوَّاهَا (7)
ونفس وما سواها۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
قسم ہے نفس کی اور اسے درست بنانے کی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور انسان کی اور اس کی جس نے اس (کے اعضا) کو برابر کیا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور نفس کی اور اس ذات کی جس نے اسے ٹھیک بنایا!
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

8
فَأَلْهَمَهَا فُجُورَهَا وَتَقْوَاهَا (8)
فألهمها فجورها وتقواها۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
پھر سمجھ دی اس کو بدکاری کی اور بچ کر چلنے کی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
پھر اس کو بدکاری (سے بچنے) اور پرہیزگاری کرنے کی سمجھ دی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
پھر اس کی نافرمانی اور اس کی پرہیزگاری ( کی پہچان) اس کے دل میں ڈال دی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

9
قَدْ أَفْلَحَ مَنْ زَكَّاهَا (9)
قد أفلح من زكاها۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
جس نے اسے پاک کیا وه کامیاب ہوا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
کہ جس نے (اپنے) نفس (یعنی روح) کو پاک رکھا وہ مراد کو پہنچا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
   یقینا وہ کامیاب ہوگیا جس نے اسے پاک کرلیا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

10
وَقَدْ خَابَ مَنْ دَسَّاهَا (10)
وقد خاب من دساها۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور جس نے اسے خاک میں ملا دیا وه ناکام ہوا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور جس نے اسے خاک میں ملایا وہ خسارے میں رہا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور یقینا وہ نامراد ہوگیا جس نے اسے مٹی میں دبا دیا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

11
كَذَّبَتْ ثَمُودُ بِطَغْوَاهَا (11)
كذبت ثمود بطغواها۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
(قوم) ﺛمود نے اپنی سرکشی کے باعﺚ جھٹلایا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
(قوم) ثمود نے اپنی سرکشی کے سبب (پیغمبر کو) جھٹلایا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
(قوم) ثمود نے اپنی سرکشی کی وجہ سے جھٹلا دیا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

12
إِذِ انْبَعَثَ أَشْقَاهَا (12)
إذ انبعث أشقاها۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
جب ان میں کا بڑا بدبخت اٹھ کھڑا ہوا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
جب ان میں سے ایک نہایت بدبخت اٹھا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
جب اس کا سب سے بڑا بدبخت اٹھا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
تفسیر آیت نمبر 12,13,14,15

13
فَقَالَ لَهُمْ رَسُولُ اللَّهِ نَاقَةَ اللَّهِ وَسُقْيَاهَا (13)
فقال لهم رسول الله ناقة الله وسقياها۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
انہیں اللہ کے رسول نے فرما دیا تھا کہ اللہ تعالیٰ کی اونٹنی اور اس کے پینے کی باری کی (حفاﻇت کرو)۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
تو خدا کے پیغمبر (صالح) نے ان سے کہا کہ خدا کی اونٹنی اور اس کے پانی پینے کی باری سے عذر کرو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
تو ان سے اللہ کے رسول نے کہا اللہ کی اونٹنی اور اس کے پینے کی باری (کا خیال رکھو)۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

14
فَكَذَّبُوهُ فَعَقَرُوهَا فَدَمْدَمَ عَلَيْهِمْ رَبُّهُمْ بِذَنْبِهِمْ فَسَوَّاهَا (14)
فكذبوه فعقروها فدمدم عليهم ربهم بذنبهم فسواها۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
ان لوگوں نے اپنے پیغمبر کو جھوٹا سمجھ کر اس اونٹنی کی کوچیں کاٹ دیں، پس ان کے رب نے ان کے گناہوں کے باعﺚ ان پر ہلاکت ڈالی اور پھر ہلاکت کو عام کر دیا اور اس بستی کو برابر کردیا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
مگر انہوں نے پیغمبر کو جھٹلایا اور اونٹنی کی کونچیں کاٹ دیں تو خدا نے ان کےگناہ کے سبب ان پر عذاب نازل کیا اور سب کو (ہلاک کر کے) برابر کر دیا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
تو انھوں نے اسے جھٹلا دیا، پس اس (اونٹنی) کی کونچیں کاٹ دیں، تو ان کے رب نے انھیں ان کے گناہ کی وجہ سے پیس کر ہلاک کر دیا، پھر اس ( بستی) کو برابر کر دیا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

15
وَلَا يَخَافُ عُقْبَاهَا (15)
ولا يخاف عقباها۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
وه نہیں ڈرتا اس کے تباه کن انجام سے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور اس کو ان کے بدلہ لینے کا کچھ بھی ڈر نہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور وہ اس (سزا) کے انجام سے نہیں ڈرتا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔