قرآن مجيد

سورۃ الزلزال
اپنا مطلوبہ لفظ تلاش کیجئیے۔

[ترجمہ محمد جوناگڑھی][ترجمہ فتح محمد جالندھری][ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
نمبر آيات تفسیر

--
بِسْمِ اللَّـهِ الرَّحْمَـنِ الرَّحِيمِ﴿﴾
شروع کرتا ہوں اللہ تعالٰی کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم کرنے والا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

1
إِذَا زُلْزِلَتِ الْأَرْضُ زِلْزَالَهَا (1)
إذا زلزلت الأرض زلزالها۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
جب زمین پوری طرح جھنجھوڑ دی جائے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
جب زمین بھونچال سے ہلا دی جائے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
جب زمین سخت ہلا دی جائے گی، اس کا سخت ہلایا جانا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
تفسیر آیت نمبر 1,2,3,4,5,6,7,8

2
وَأَخْرَجَتِ الْأَرْضُ أَثْقَالَهَا (2)
وأخرجت الأرض أثقالها۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور اپنے بوجھ باہر نکال پھینکے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور زمین اپنے (اندر) کے بوجھ نکال ڈالے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور زمین اپنے بوجھ نکال باہر کرے گی ۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

3
وَقَالَ الْإِنْسَانُ مَا لَهَا (3)
وقال الإنسان ما لها۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
انسان کہنے لگے گا کہ اسے کیا ہوگیا؟۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور انسان کہے گا کہ اس کو کیا ہوا ہے؟۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور انسان کہے گا اسے کیا ہے؟
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

4
يَوْمَئِذٍ تُحَدِّثُ أَخْبَارَهَا (4)
يومئذ تحدث أخبارها۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اس دن زمین اپنی سب خبریں بیان کردے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اس روز وہ اپنے حالات بیان کردے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اس دن وہ اپنی خبریں بیان کرے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

5
بِأَنَّ رَبَّكَ أَوْحَى لَهَا (5)
بأن ربك أوحى لها۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اس لئے کہ تیرے رب نے اسے حکم دیا ہوگا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
کیونکہ تمہارے پروردگار نے اس کو حکم بھیجا (ہوگا)۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اس لیے کہ تیرے رب نے اسے وحی کی ہو گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

6
يَوْمَئِذٍ يَصْدُرُ النَّاسُ أَشْتَاتًا لِيُرَوْا أَعْمَالَهُمْ (6)
يومئذ يصدر الناس أشتاتا ليروا أعمالهم۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اس روز لوگ مختلف جماعتیں ہو کر (واپس) لوٹیں گے تاکہ انہیں ان کے اعمال دکھا دیئے جائیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اس دن لوگ گروہ گروہ ہو کر آئیں گے تاکہ ان کو ان کے اعمال دکھا دیئے جائیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اس دن لوگ الگ الگ ہو کر واپس لوٹیں گے، تاکہ انھیں ان کے اعمال دکھائے جائیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

7
فَمَنْ يَعْمَلْ مِثْقَالَ ذَرَّةٍ خَيْرًا يَرَهُ (7)
فمن يعمل مثقال ذرة خيرا يره۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
پس جس نے ذره برابر نیکی کی ہوگی وه اسے دیکھ لے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
تو جس نے ذرہ بھر نیکی کی ہو گی وہ اس کو دیکھ لے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
تو جو شخص ایک ذرہ برابر نیکی کرے گا اسے دیکھ لے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

8
وَمَنْ يَعْمَلْ مِثْقَالَ ذَرَّةٍ شَرًّا يَرَهُ (8)
ومن يعمل مثقال ذرة شرا يره۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور جس نے ذره برابر برائی کی ہوگی وه اسے دیکھ لے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور جس نے ذرہ بھر برائی کی ہوگی وہ اسے دیکھ لے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور جو شخص ایک ذرہ برابر برائی کرے گا اسے دیکھ لے گا ۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔