الحمدللہ! انگلش میں کتب الستہ سرچ کی سہولت کے ساتھ پیش کر دی گئی ہے۔

 
سنن ابي داود کل احادیث 5274 :حدیث نمبر
سنن ابي داود
کتاب: نماز کے احکام و مسائل
Prayer (Kitab Al-Salat)
69. باب الإِمَامِ يُصَلِّي مِنْ قُعُودٍ
69. باب: امام کے بیٹھ کر نماز پڑھانے کا بیان۔
Chapter: About The Imam Praying While Sitting Down.
حدیث نمبر: 607
Save to word مکررات اعراب English
(مرفوع) حدثنا عبدة بن عبد الله، اخبرنا زيد يعني ابن الحباب، عن محمد بن صالح، حدثني حصين من ولد سعد بن معاذ، عن اسيد بن حضير، انه كان يؤمهم، قال: فجاء رسول الله صلى الله عليه وسلم يعوده، فقالوا: يا رسول الله، إن إمامنا مريض، فقال:" إذا صلى قاعدا فصلوا قعودا"، قال ابو داود: وهذا الحديث ليس بمتصل.
(مرفوع) حَدَّثَنَا عَبْدَةُ بْنُ عَبْدِ اللَّهِ، أَخْبَرَنَا زَيْدٌ يَعْنِي ابْنَ الْحُبَابِ، عَنْ مُحَمَّدِ بْنِ صَالِحٍ، حَدَّثَنِي حُصَيْنٌ مِنْ وَلَدِ سَعْدِ بْنِ مُعَاذٍ، عَنْ أُسَيْدِ بْنِ حُضَيْرٍ، أَنَّهُ كَانَ يَؤُمُّهُمْ، قَالَ: فَجَاءَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَعُودُهُ، فَقَالُوا: يَا رَسُولَ اللَّهِ، إِنَّ إِمَامَنَا مَرِيضٌ، فَقَالَ:" إِذَا صَلَّى قَاعِدًا فَصَلُّوا قُعُودًا"، قَالَ أَبُو دَاوُد: وَهَذَا الْحَدِيثُ لَيْسَ بِمُتَّصِلٍ.
اسید بن حضیر رضی اللہ عنہ کہتے ہیں کہ وہ اپنی قوم کی امامت کرتے تھے، وہ کہتے ہیں کہ ایک بار رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم ان کی عیادت کے لیے تشریف لائے، تو لوگ کہنے لگے: اللہ کے رسول! ہمارے امام بیمار ہیں، تو آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: جب امام بیٹھ کر نماز پڑھے تو تم لوگ بھی بیٹھ کر پڑھو۔ ابوداؤد کہتے ہیں: یہ حدیث متصل نہیں ہے۔

تخریج الحدیث دارالدعوہ: «‏‏‏‏تفرد بہ أبو داود، (تحفة الأشراف: 152) (صحیح)» ‏‏‏‏ (سابقہ حدیثوں سے تقویت پاکر یہ حدیث معنیً صحیح ہے، ورنہ مؤلف کی سند میں انقطاع ہے، حصین کی اسید بن حضیر رضی اللہ عنہ سے لقاء ثابت نہیں ہے)

Husain reported on the authority of the children of Saad bin Muadh that Usaid bin Hudair used to act as their Imam. (when he fell ill) the Messenger of Allah ﷺ came to him inquiring about his illness. They said: Messenger of Allah, our Imam is ill. He said: When he prays sitting, pray sitting. Abu Dawud said: The chain of this tradition is not continuous (muttasil)
USC-MSA web (English) Reference: Book 2 , Number 607


قال الشيخ الألباني: صحيح

قال الشيخ زبير على زئي: ضعيف
إسناده ضعيف
محمد بن صالح الأزرق مجھول الحال وحصين بن عبد الرحمٰن الأشھلي لم يدرك أسيد بن حضير
وثبت عن أسيد نحوه موقوفًا انظر الأوسط لابن المنذر (4/ 206،اثر: 2045 وسنده صحيح) وصححه الحافظ في فتح الباري (3/ 176)
انوار الصحيفه، صفحه نمبر 35

   سنن أبي داود607أسيد بن حضيرإذا صلى قاعدا فصلوا قعودا
سنن ابی داود کی حدیث نمبر 607 کے فوائد و مسائل
  الشيخ عمر فاروق سعيدي حفظ الله، فوائد و مسائل، تحت الحديث سنن ابي داود 607  
607۔ اردو حاشیہ:
➊ شیخ البانی رحمہ اللہ کے نزدیک یہ حدیث صحیح ہے لیکن یہ اور اس مفہوم کی دیگر احادیث اوائل دور کی ہیں، جس میں یہی حکم تھا کہ امام و مقتدی کھڑے ہونے یا بیٹھنے کی صورت یکساں ہوں۔ مگر نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی آخری نماز میں جو آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے بیٹھ کر پڑھائی اس میں صحابہ کرام رضوان اللہ عنہم اجمعین کھڑے ہوئے تھے، تو وہ ان کی ناسخ ہے۔
➋ نبی صلی اللہ علیہ وسلم بشری عوارض سے دو چار ہوتے رہتے تھے۔
➌ نماز میں مقتدی کو انتقال ارکان میں امام سے پیچھے پیچھے رہنا واجب ہے، وہ کسی بھی رکن میں امام سے پہل نہ کریں۔
   سنن ابی داود شرح از الشیخ عمر فاروق سعدی، حدیث/صفحہ نمبر: 607   


http://islamicurdubooks.com/ 2005-2023 islamicurdubooks@gmail.com No Copyright Notice.
Please feel free to download and use them as you would like.
Acknowledgement / a link to www.islamicurdubooks.com will be appreciated.