الحمدللہ ! قرآن پاک روٹ ورڈ سرچ اور مترادف الفاظ کی سہولت پیش کر دی گئی ہے۔

 
صحيح مسلم کل احادیث 3033 :ترقیم فواد عبدالباقی
صحيح مسلم کل احادیث 7563 :حدیث نمبر
صحيح مسلم
امور حکومت کا بیان
1. باب النَّاسُ تَبَعٌ لِقُرَيْشٍ وَالْخِلاَفَةُ فِي قُرَيْشٍ:
1. باب: خلیفہ قریش میں سے ہونا چاہیئے۔
حدیث نمبر: 4710
پی ڈی ایف بنائیں اعراب
حدثنا نصر بن علي الجهضمي ، حدثنا يزيد بن زريع ، حدثنا ابن عون . ح وحدثنا احمد بن عثمان النوفلي واللفظ له، حدثنا ازهر ، حدثنا ابن عون ، عن الشعبي ، عن جابر بن سمرة ، قال: انطلقت إلى رسول الله صلى الله عليه وسلم ومعي ابي، فسمعته، يقول: " لا يزال هذا الدين عزيزا منيعا إلى اثني عشر خليفة، فقال كلمة صمنيها الناس، فقلت لابي: ما قال؟، قال: كلهم من قريش ".حَدَّثَنَا نَصْرُ بْنُ عَلِيٍّ الْجَهْضَمِيُّ ، حَدَّثَنَا يَزِيدُ بْنُ زُرَيْعٍ ، حَدَّثَنَا ابْنُ عَوْنٍ . ح وحَدَّثَنَا أَحْمَدُ بْنُ عُثْمَانَ النَّوْفَلِيُّ وَاللَّفْظُ لَهُ، حَدَّثَنَا أَزْهَرُ ، حَدَّثَنَا ابْنُ عَوْنٍ ، عَنْ الشَّعْبِيِّ ، عَنْ جَابِرِ بْنِ سَمُرَةَ ، قَالَ: انْطَلَقْتُ إِلَى رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ وَمَعِي أَبِي، فَسَمِعْتُهُ، يَقُولُ: " لَا يَزَالُ هَذَا الدِّينُ عَزِيزًا مَنِيعًا إِلَى اثْنَيْ عَشَرَ خَلِيفَةً، فَقَالَ كَلِمَةً صَمَّنِيهَا النَّاسُ، فَقُلْتُ لِأَبِي: مَا قَالَ؟، قَالَ: كُلُّهُمْ مِنْ قُرَيْشٍ ".
عبداللہ) بن عون نے شعبی سے، انہوں نے حضرت جابر بن سمرہ رضی اللہ عنہ سے روایت کی، کہا: میں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی خدمت میں گیا، میرے ساتھ میرے والد تھے، میں نے آپ صلی اللہ علیہ وسلم کو یہ فرماتے ہوئے سنا: "بارہ خلفاء (کے عہد) تک مسلسل یہ دین غالب اور (دشمنوں سے) محفوظ رہے گا۔" پھر آپ نے کوئی کلمہ فرمایا جسے لوگوں نے مجھے سننے نہ دیا، میں نے اپنے والد سے پوچھا: آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے کیا فرمایا؟ انہوں نے کہا: آپ نے فرمایا: "وہ سب قریش میں سے ہوں گے
حضرت جابر بن سمرہ رضی اللہ تعالی عنہما بیان کرتے ہیں، میں اپنے باپ کے ساتھ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی خدمت میں حاضر ہوا، تو میں نے آپ کو یہ فرماتے ہوئے سنا، یہ دین غالب اور محفوظ رہے گا، یہاں تک کہ بارہ خلیفہ ہو جائیں گے۔ اور آپ نے ایک بات کہی، جو لوگوں (کے شور) نے مجھے سننے نہیں دی، تو میں نے اپنے باپ سے پوچھا، آپ نے کیا فرمایا؟ اس نے کہا، آپصلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: سب قریش میں سے ہوں گے۔
ترقیم فوادعبدالباقی: 1821

   صحيح البخاري7223جابر بن سمرةيكون اثنا عشر أميرا كلهم من قريش
   صحيح مسلم4711جابر بن سمرةلا يزال الدين قائما حتى تقوم الساعة يكون عليكم اثنا عشر خليفة كلهم من قريش عصيبة من المسلمين يفتتحون البيت الأبيض بيت كسرى أو آل كسرى بين يدي الساعة كذابين فاحذروهم إذا أعطى الله أحدكم خيرا فليبدأ بنفسه وأهل بيته
   صحيح مسلم4706جابر بن سمرةلا يزال أمر الناس ماضيا ما وليهم اثنا عشر رجلا كلهم من قريش
   صحيح مسلم4709جابر بن سمرةلا يزال هذا الأمر عزيزا إلى اثني عشر خليفة كلهم من قريش
   صحيح مسلم4708جابر بن سمرةلا يزال الإسلام عزيزا إلى اثني عشر خليفة كلهم من قريش
   صحيح مسلم4710جابر بن سمرةلا يزال هذا الدين عزيزا منيعا إلى اثني عشر خليفة كلهم من قريش
   جامع الترمذي2223جابر بن سمرةيكون من بعدي اثنا عشر أميرا كلهم من قريش
   سنن أبي داود4279جابر بن سمرةلا يزال هذا الدين قائما حتى يكون عليكم اثنا عشر خليفة كلهم تجتمع عليه الأمة كلهم من قريش
   سنن أبي داود4280جابر بن سمرةلا يزال هذا الدين عزيزا إلى اثني عشر خليفة كلهم من قريش

تخریج الحدیث کے تحت حدیث کے فوائد و مسائل
  الشيخ الحديث مولانا عبدالعزيز علوي حفظ الله، فوائد و مسائل، تحت الحديث ، صحيح مسلم: 4710  
1
حدیث حاشیہ:
مفردات الحدیث:
(1)
مَنِيعً:
قوت وزوروالا،
محفوظ۔
(2)
صَمَّنِيهَا النَّاسُ:
لوگوں نے مجھے اس سے بہرہ کردیا،
یعنی لوگوں کے شور کی وجہ سے میں اسے سن نہ سکا۔
   تحفۃ المسلم شرح صحیح مسلم، حدیث\صفحہ نمبر: 4710   

http://islamicurdubooks.com/ 2005-2023 islamicurdubooks@gmail.com No Copyright Notice.
Please feel free to download and use them as you would like.
Acknowledgement / a link to www.islamicurdubooks.com will be appreciated.