قرآن مجيد

سورۃ المرسلات
اپنا مطلوبہ لفظ تلاش کیجئیے۔

[ترجمہ محمد جوناگڑھی][ترجمہ فتح محمد جالندھری][ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
نمبر آيات تفسیر

--
بِسْمِ اللَّـهِ الرَّحْمَـنِ الرَّحِيمِ﴿﴾
شروع کرتا ہوں اللہ تعالٰی کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم کرنے والا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

1
وَالْمُرْسَلَاتِ عُرْفًا (1)
والمرسلات عرفا۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
دل خوش کن چلتی ہواؤں کی قسم۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
ہواؤں کی قسم جو نرم نرم چلتی ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
قسم ہے ان ( ہوائوں) کی جو جانے پہچانے معمول کے مطابق چھوڑی جاتی ہیں!
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
تفسیر آیت نمبر 1,2,3,4,5,6,7,8,9,10,11,12,13,14,15

2
فَالْعَاصِفَاتِ عَصْفًا (2)
فالعاصفات عصفا۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
پھر زور سے جھونکا دینے والیوں کی قسم۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
پھر زور پکڑ کر جھکڑ ہو جاتی ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
پھر جو تند ہو کر تیز چلنے والی ہیں!
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

3
وَالنَّاشِرَاتِ نَشْرًا (3)
والناشرات نشرا۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
پھر (ابر کو) ابھار کر پراگنده کرنے والیوں کی قسم۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور (بادلوں کو) پھاڑ کر پھیلا دیتی ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور جو(بادلوں کو اٹھاکر) پھیلا دینے والی ہیں! خوب پھیلانا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

4
فَالْفَارِقَاتِ فَرْقًا (4)
فالفارقات فرقا۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
پھر حق وباطل کو جدا جدا کر دینے والے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
پھر ان کو پھاڑ کر جدا جدا کر دیتی ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
پھر جو (انھیں) پھاڑ کر جدا جدا کر دینے والی ہیں!
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

5
فَالْمُلْقِيَاتِ ذِكْرًا (5)
فالملقيات ذكرا۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور وحی ﻻنے والے فرشتوں کی قسم۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
پھر فرشتوں کی قسم جو وحی لاتے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
پھر جو ( دلوں میں) یاد( الٰہی) ڈالنے والی ہیں!
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

6
عُذْرًا أَوْ نُذْرًا (6)
عذرا أو نذرا۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
جو (وحی) الزام اتارنے یا آگاه کردینے کے لیے ہوتی ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
تاکہ عذر (رفع) کردیا جائے یا ڈر سنا دیا جائے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
عذر کے لیے، یا ڈرانے کے لیے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

7
إِنَّمَا تُوعَدُونَ لَوَاقِعٌ (7)
إنما توعدون لواقع۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
جس چیز کا تم سے وعده کیا جاتا ہے وہ یقیناً ہونے والی ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
کہ جس بات کا تم سے وعدہ کیا جاتا ہے وہ ہو کر رہے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
بے شک تم سے جس چیز کا وعدہ کیا جاتا ہے یقینا ہو کر رہنے والی ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

8
فَإِذَا النُّجُومُ طُمِسَتْ (8)
فإذا النجوم طمست۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
پس جب ستارے بے نور کردئے جائیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
جب تاروں کی چمک جاتی رہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
پس جب ستارے مٹا دیے جائیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

9
وَإِذَا السَّمَاءُ فُرِجَتْ (9)
وإذا السماء فرجت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور جب آسمان توڑ پھوڑ دیا جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور جب آسمان پھٹ جائے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور جب آسمان کھولا جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

10
وَإِذَا الْجِبَالُ نُسِفَتْ (10)
وإذا الجبال نسفت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور جب پہاڑ ٹکڑے ٹکڑے کر کے اڑا دیئے جائیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور جب پہاڑ اُڑے اُڑے پھریں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور جب پہاڑ اڑا دیے جائیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

11
وَإِذَا الرُّسُلُ أُقِّتَتْ (11)
وإذا الرسل أقتت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور جب رسولوں کو وقت مقرره پر ﻻیا جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور جب پیغمبر فراہم کئے جائیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور جب (وہ وقت آجائے گا) جو رسولوں کے ساتھ مقرر کیا گیا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

12
لِأَيِّ يَوْمٍ أُجِّلَتْ (12)
لأي يوم أجلت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
کس دن کے لیے (ان سب کو) مؤخر کیا گیا ہے؟۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
بھلا (ان امور میں) تاخیر کس دن کے لئے کی گئی؟۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
( یہ سب چیزیں) کس دن کے لیے مؤخر کی گئی ہیں؟
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

13
لِيَوْمِ الْفَصْلِ (13)
ليوم الفصل۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
فیصلے کے دن کے لیے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
فیصلے کے دن کے لئے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
فیصلے کے دن کے لیے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

14
وَمَا أَدْرَاكَ مَا يَوْمُ الْفَصْلِ (14)
وما أدراك ما يوم الفصل۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور تجھے کیا معلوم کہ فیصلے کا دن کیا ہے؟۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور تمہیں کیا خبر کہ فیصلے کا دن کیا ہے؟۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور تجھے کس چیز نے معلوم کروایاکہ فیصلے کادن کیا ہے؟
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

15
وَيْلٌ يَوْمَئِذٍ لِلْمُكَذِّبِينَ (15)
ويل يومئذ للمكذبين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اس دن جھٹلانے والوں کی خرابی ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اس دن جھٹلانے والوں کے لئے خرابی ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اس دن جھٹلانے والوں کے لیے بڑی ہلاکت ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

16
أَلَمْ نُهْلِكِ الْأَوَّلِينَ (16)
ألم نهلك الأولين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
کیا ہم نے اگلوں کو ہلاک نہیں کیا؟۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
کیا ہم نے پہلے لوگوں کو ہلاک نہیں کر ڈالا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
کیا ہم نے پہلوں کو ہلاک نہیں کیا؟
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
تفسیر آیت نمبر 16,17,18,19,20,21,22,23,24,25,26,27,28

17
ثُمَّ نُتْبِعُهُمُ الْآخِرِينَ (17)
ثم نتبعهم الآخرين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
پھر ہم ان کے بعد پچھلوں کو ﻻئے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
پھر ان پچھلوں کو بھی ان کے پیچھے بھیج دیتے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
پھر ہم ان کے پیچھے دوسروں کو بھیجتے رہتے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

18
كَذَلِكَ نَفْعَلُ بِالْمُجْرِمِينَ (18)
كذلك نفعل بالمجرمين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
ہم گنہگاروں کے ساتھ اسی طرح کرتے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
ہم گنہگاروں کے ساتھ ایسا ہی کیا کرتے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
ہم مجرموں کے ساتھ اسی طرح کرتے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

19
وَيْلٌ يَوْمَئِذٍ لِلْمُكَذِّبِينَ (19)
ويل يومئذ للمكذبين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اس دن جھٹلانے والوں کے لیے ویل (افسوس) ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اس دن جھٹلانے والوں کی خرابی ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اس دن جھٹلانے والوں کے لیے بڑی ہلاکت ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

20
أَلَمْ نَخْلُقْكُمْ مِنْ مَاءٍ مَهِينٍ (20)
ألم نخلقكم من ماء مهين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
کیا ہم نے تمہیں حقیر پانی سے (منی سے) پیدا نہیں کیا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
کیا ہم نے تم کو حقیر پانی سے نہیں پیدا کیا؟۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
کیا ہم نے تمھیں ایک حقیر پانی سے پیدا نہیں کیا؟
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

21
فَجَعَلْنَاهُ فِي قَرَارٍ مَكِينٍ (21)
فجعلناه في قرار مكين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
پھر ہم نے اسے مضبوط ومحفوظ جگہ میں رکھا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اس کو ایک محفوظ جگہ میں رکھا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
پھر ہم نے اسے ایک مضبوط ٹھکانے میں رکھا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

22
إِلَى قَدَرٍ مَعْلُومٍ (22)
إلى قدر معلوم۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
ایک مقرره وقت تک۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
ایک وقت معین تک۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
ایک معلوم اندازے تک۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

23
فَقَدَرْنَا فَنِعْمَ الْقَادِرُونَ (23)
فقدرنا فنعم القادرون۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
پھر ہم نے اندازه کیا اور ہم کیا خوب اندازه کرنے والے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
پھر اندازہ مقرر کیا اور ہم کیا ہی خوب اندازہ مقرر کرنے والے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
پس ہم نے اندازہ کیا تو ہم اچھے اندازہ کرنے والے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

24
وَيْلٌ يَوْمَئِذٍ لِلْمُكَذِّبِينَ (24)
ويل يومئذ للمكذبين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اس دن تکذیب کرنے والوں کی خرابی ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اس دن جھٹلانے والوں کی خرابی ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اس دن جھٹلانے والوں کے لیے بڑی ہلاکت ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

25
أَلَمْ نَجْعَلِ الْأَرْضَ كِفَاتًا (25)
ألم نجعل الأرض كفاتا۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
کیا ہم نے زمین کو سمیٹنے والی نہیں بنایا؟۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
کیا ہم نے زمین کو سمیٹنے والی نہیں بنایا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
کیا ہم نے زمین کو سمیٹنے والی نہیں بنایا؟
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

26
أَحْيَاءً وَأَمْوَاتًا (26)
أحياء وأمواتا۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
زندوں کو بھی اور مردوں کو بھی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
یعنی) زندوں اور مردوں کو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
زندوں کو اور مردوں کو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

27
وَجَعَلْنَا فِيهَا رَوَاسِيَ شَامِخَاتٍ وَأَسْقَيْنَاكُمْ مَاءً فُرَاتًا (27)
وجعلنا فيها رواسي شامخات وأسقيناكم ماء فراتا۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور ہم نے اس میں بلند وبھاری پہاڑ بنادیے اور تمہیں سیراب کرنے واﻻ میٹھا پانی پلایا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
(بنایا) اور اس پر اونچے اونچے پہاڑ رکھ دیئے اور تم لوگوں کو میٹھا پانی پلایا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور ہم نے اس میں بلند پہاڑ بنائے اور ہم نے تمھیں نہایت میٹھا پانی پلانے کے لیے دیا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

28
وَيْلٌ يَوْمَئِذٍ لِلْمُكَذِّبِينَ (28)
ويل يومئذ للمكذبين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اس دن جھٹلانے والوں کے لیے وائے اور افسوس ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اس دن جھٹلانے والوں کی خرابی ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اس دن جھٹلانے والوں کے لیے بڑی ہلاکت ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

29
انْطَلِقُوا إِلَى مَا كُنْتُمْ بِهِ تُكَذِّبُونَ (29)
انطلقوا إلى ما كنتم به تكذبون۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اس دوزخ کی طرف جاؤ جسے تم جھٹلاتے رہے تھے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
جس چیز کو تم جھٹلایا کرتے تھے۔ (اب) اس کی طرف چلو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اس چیز کی طرف چلو جسے تم جھٹلاتے تھے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
تفسیر آیت نمبر 29,30,31,32,33,34,35,36,37,38,39,40

30
انْطَلِقُوا إِلَى ظِلٍّ ذِي ثَلَاثِ شُعَبٍ (30)
انطلقوا إلى ظل ذي ثلاث شعب۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
چلو تین شاخوں والے سائے کی طرف۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
(یعنی) اس سائے کی طرف چلو جس کی تین شاخیں ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
ایک سائے کی طرف چلو جو تین شاخوں والا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

31
لَا ظَلِيلٍ وَلَا يُغْنِي مِنَ اللَّهَبِ (31)
لا ظليل ولا يغني من اللهب۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
جو در اصل نہ سایہ دینے واﻻ ہے اور نہ شعلے سے بچاسکتا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
نہ ٹھنڈی چھاؤں اور نہ لپٹ سے بچاؤ۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
نہ سایہ کرنے والا ہے اور نہ وہ شعلے سے کسی کام آتا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

32
إِنَّهَا تَرْمِي بِشَرَرٍ كَالْقَصْرِ (32)
إنها ترمي بشرر كالقصر۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
یقیناً دوزخ چنگاریاں پھینکتی ہے جو مثل محل کے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اس سے (آگ کی اتنی اتنی بڑی) چنگاریاں اُڑتی ہیں جیسے محل۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
بلاشبہ وہ (آگ) محل جیسے شرارے پھینکے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

33
كَأَنَّهُ جِمَالَتٌ صُفْرٌ (33)
كأنه جمالت صفر۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
گویا کہ وه زرد اونٹ ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
گویا زرد رنگ کے اونٹ ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
جیسے وہ زرد اونٹ ہوں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

34
وَيْلٌ يَوْمَئِذٍ لِلْمُكَذِّبِينَ (34)
ويل يومئذ للمكذبين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
آج ان جھٹلانے والوں کی درگت ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اس دن جھٹلانے والوں کی خرابی ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اس دن جھٹلانے والوں کے لیے بڑی ہلاکت ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

35
هَذَا يَوْمُ لَا يَنْطِقُونَ (35)
هذا يوم لا ينطقون۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
آج (کا دن) وه دن ہے کہ یہ بول بھی نہ سکیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
یہ وہ دن ہے کہ (لوگ) لب تک نہ ہلا سکیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
یہ دن ہے کہ وہ نہیں بولیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

36
وَلَا يُؤْذَنُ لَهُمْ فَيَعْتَذِرُونَ (36)
ولا يؤذن لهم فيعتذرون۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
نہ انہیں معذرت کی اجازت دی جائے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور نہ ان کو اجازت دی جائے گی کہ عذر کرسکیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور نہ انھیں اجازت دی جائے گی کہ وہ عذر کریں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

37
وَيْلٌ يَوْمَئِذٍ لِلْمُكَذِّبِينَ (37)
ويل يومئذ للمكذبين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اس دن جھٹلانے والوں کی خرابی ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اس دن جھٹلانے والوں کی خرابی ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اس دن جھٹلانے والوں کے لیے بڑی ہلاکت ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

38
هَذَا يَوْمُ الْفَصْلِ جَمَعْنَاكُمْ وَالْأَوَّلِينَ (38)
هذا يوم الفصل جمعناكم والأولين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
یہ ہے فیصلے کا دن ہم نے تمہیں اور اگلوں کو سب کو جمع کرلیا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
یہی فیصلے کا دن ہے (جس میں) ہم نے تم کو اور پہلے لوگوں کو جمع کیا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
یہ فیصلے کا دن ہے، ہم نے تمھیں اور پہلوں کو اکٹھا کر دیا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

39
فَإِنْ كَانَ لَكُمْ كَيْدٌ فَكِيدُونِ (39)
فإن كان لكم كيد فكيدون۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
پس اگر تم مجھ سے کوئی چال چل سکتے ہو تو چل لو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اگر تم کو کوئی داؤں آتا ہو تو مجھ سے کر لو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
تو اگر تمھارے پاس کوئی خفیہ تدبیر ہے تو میرے ساتھ کر لو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

40
وَيْلٌ يَوْمَئِذٍ لِلْمُكَذِّبِينَ (40)
ويل يومئذ للمكذبين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
وائے ہے اس دن جھٹلانے والوں کے لیے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اس دن جھٹلانے والوں کی خرابی ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اس دن جھٹلانے والوں کے لیے بڑی ہلاکت ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

41
إِنَّ الْمُتَّقِينَ فِي ظِلَالٍ وَعُيُونٍ (41)
إن المتقين في ظلال وعيون۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
بیشک پرہیزگار لوگ سایوں میں ہیں اور بہتے چشموں میں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
بےشک پرہیزگار سایوں اور چشموں میں ہوں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
یقینا پرہیز گار لوگ اس دن سایوں اور چشموں میں ہوں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
تفسیر آیت نمبر 41,42,43,44,45,46,47,48,49,50

42
وَفَوَاكِهَ مِمَّا يَشْتَهُونَ (42)
وفواكه مما يشتهون۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور ان میووں میں جن کی وه خواہش کریں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور میؤوں میں جو ان کو مرغوب ہوں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور پھلوں میں، جس قسم میں سے وہ چاہیں گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

43
كُلُوا وَاشْرَبُوا هَنِيئًا بِمَا كُنْتُمْ تَعْمَلُونَ (43)
كلوا واشربوا هنيئا بما كنتم تعملون۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
(اے جنتیو!) کھاؤ پیو مزے سےاپنے کیے ہوئے اعمال کے بدلے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور جو عمل تم کرتے رہے تھے ان کے بدلے میں مزے سے کھاؤ اور پیو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
مزے سے کھاؤ اور پیو، اس کے عوض جو تم کیا کرتے تھے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

44
إِنَّا كَذَلِكَ نَجْزِي الْمُحْسِنِينَ (44)
إنا كذلك نجزي المحسنين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
یقیناً ہم نیکی کرنے والوں کو اسی طرح جزا دیتے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
ہم نیکو کاروں کو ایسا ہی بدلہ دیا کرتے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
یقینا ہم نیکی کرنے والوں کو اسی طرح بدلہ دیتے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

45
وَيْلٌ يَوْمَئِذٍ لِلْمُكَذِّبِينَ (45)
ويل يومئذ للمكذبين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اس دن سچا نہ جاننے والوں کے لیے ویل (افسوس) ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اس دن جھٹلانے والوں کی خرابی ہوگی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اس دن جھٹلانے والوں کے لیے بڑی ہلاکت ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

46
كُلُوا وَتَمَتَّعُوا قَلِيلًا إِنَّكُمْ مُجْرِمُونَ (46)
كلوا وتمتعوا قليلا إنكم مجرمون۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
(اے جھٹلانے والو) تم دنیا میں تھوڑا سا کھا لو اور فائده اٹھا لو بیشک تم گنہگار ہو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
(اے جھٹلانے والو!) تم کسی قدر کھا لو اور فائدے اُٹھا لو تم بےشک گنہگار ہو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
(اے جھٹلانے والو!) کھالو اور تھوڑا سا فائدہ اٹھا لو، یقینا تم مجرم ہو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

47
وَيْلٌ يَوْمَئِذٍ لِلْمُكَذِّبِينَ (47)
ويل يومئذ للمكذبين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اس دن جھٹلانے والوں کے لیے سخت ہلاکت ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اس دن جھٹلانے والوں کی خرابی ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اس دن جھٹلانے والوں کے لیے بڑی ہلاکت ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

48
وَإِذَا قِيلَ لَهُمُ ارْكَعُوا لَا يَرْكَعُونَ (48)
وإذا قيل لهم اركعوا لا يركعون۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
ان سے جب کہا جاتا ہے کہ رکوع کر لو تو نہیں کرتے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور جب ان سے کہا جاتا ہے کہ (خدا کے آگے) جھکو تو جھکتے نہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور جب ان سے کہا جاتا ہے کہ جھک جاؤ تو وہ نہیں جھکتے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

49
وَيْلٌ يَوْمَئِذٍ لِلْمُكَذِّبِينَ (49)
ويل يومئذ للمكذبين۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اس دن جھٹلانے والوں کی تباہی ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اس دن جھٹلانے والوں کی خرابی ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اس دن جھٹلانے والوں کے لیے بڑی ہلاکت ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

50
فَبِأَيِّ حَدِيثٍ بَعْدَهُ يُؤْمِنُونَ (50)
فبأي حديث بعده يؤمنون۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اب اس قرآن کے بعد کس بات پر ایمان ﻻئیں گے؟۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اب اس کے بعد یہ کون سی بات پر ایمان لائیں گے؟۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
پھر اس کے بعد وہ کس بات پر ایمان لائیں گے؟
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔