قرآن مجيد

سورۃ الانشقاق
اپنا مطلوبہ لفظ تلاش کیجئیے۔

[ترجمہ محمد جوناگڑھی][ترجمہ فتح محمد جالندھری][ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
نمبر آيات تفسیر

--
بِسْمِ اللَّـهِ الرَّحْمَـنِ الرَّحِيمِ﴿﴾
شروع کرتا ہوں اللہ تعالٰی کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم کرنے والا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

1
إِذَا السَّمَاءُ انْشَقَّتْ (1)
إذا السماء انشقت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
جب آسمان پھٹ جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
جب آسمان پھٹ جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
جب آسمان پھٹ جائے گا ۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
تفسیر آیت نمبر 1,2,3,4,5,6

2
وَأَذِنَتْ لِرَبِّهَا وَحُقَّتْ (2)
وأذنت لربها وحقت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور اپنے رب کے حکم پر کان لگائے گا اور اسی کے ﻻئق وه ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور اپنے پروردگار کا فرمان بجا لائے گا اور اسے واجب بھی یہ ہی ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور اپنے رب کے حکم پر کان لگائے گا اور یہی اس کا حق ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

3
وَإِذَا الْأَرْضُ مُدَّتْ (3)
وإذا الأرض مدت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور جب زمین (کھینچ کر) پھیلا دی جائے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور جب زمین ہموار کر دی جائے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور جب زمین پھیلا دی جائے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

4
وَأَلْقَتْ مَا فِيهَا وَتَخَلَّتْ (4)
وألقت ما فيها وتخلت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور اس میں جو ہے اسے وه اگل دے گی اور خالی ہو جائے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
جو کچھ اس میں ہے اسے نکال کر باہر ڈال دے گی اور (بالکل) خالی ہو جائے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور اس میں جو کچھ ہے اسے باہر پھینک دے گی اور خالی ہو جائے گی ۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

5
وَأَذِنَتْ لِرَبِّهَا وَحُقَّتْ (5)
وأذنت لربها وحقت۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور اپنے رب کے حکم پر کان لگائے گی اور اسی کے ﻻئق وه ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور اپنے پروردگار کے ارشاد کی تعمیل کرے گی اور اس کو لازم بھی یہی ہے (تو قیامت قائم ہو جائے گی)۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور اپنے رب کے حکم پر کان لگائے گی اور یہی اس کا حق ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

6
يَا أَيُّهَا الْإِنْسَانُ إِنَّكَ كَادِحٌ إِلَى رَبِّكَ كَدْحًا فَمُلَاقِيهِ (6)
يا أيها الإنسان إنك كادح إلى ربك كدحا فملاقيه۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اے انسان! تو اپنے رب سے ملنے تک یہ کوشش اور تمام کام اور محنتیں کرکے اس سے ملاقات کرنے واﻻ ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اے انسان! تو اپنے پروردگار کی طرف (پہنچنے میں) خوب کوشِش کرتا ہے سو اس سے جا ملے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اے انسان! بے شک تو مشقت کرتے کرتے اپنے رب کی طرف جانے والا ہے، سخت مشقت، پھر اس سے ملنے والا ہے ۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

7
فَأَمَّا مَنْ أُوتِيَ كِتَابَهُ بِيَمِينِهِ (7)
فأما من أوتي كتابه بيمينه۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
تو (اس وقت) جس شخص کے داہنے ہاتھ میں اعمال نامہ دیا جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
تو جس کا نامہٴ (اعمال) اس کے داہنے ہاتھ میں دیا جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
پس لیکن وہ شخص جسے اس کا اعمال نامہ اس کے دائیں ہاتھ میں دیا گیا ۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
تفسیر آیت نمبر 7,8,9,10,11,12,13,14,15

8
فَسَوْفَ يُحَاسَبُ حِسَابًا يَسِيرًا (8)
فسوف يحاسب حسابا يسيرا۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اس کا حساب تو بڑی آسانی سے لیا جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اس سے حساب آسان لیا جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
سو عنقریب اس سے حساب لیا جائے گا، نہایت آسان حساب۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

9
وَيَنْقَلِبُ إِلَى أَهْلِهِ مَسْرُورًا (9)
وينقلب إلى أهله مسرورا۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور وه اپنے اہل کی طرف ہنسی خوشی لوٹ آئے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور وہ اپنے گھر والوں میں خوش خوش آئے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور وہ اپنے گھر والوں کی طرف خوش خوش واپس آئے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

10
وَأَمَّا مَنْ أُوتِيَ كِتَابَهُ وَرَاءَ ظَهْرِهِ (10)
وأما من أوتي كتابه وراء ظهره۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
ہاں جس شخص کا اعمال نامہ اس کی پیٹھ کے پیچھے سے دیا جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور جس کا نامہٴ (اعمال) اس کی پیٹھ کے پیچھے سے دیا جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور لیکن وہ شخص جسے اس کا اعمال نامہ اس کی پیٹھ کے پیچھے دیا گیا ۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

11
فَسَوْفَ يَدْعُو ثُبُورًا (11)
فسوف يدعو ثبورا۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
تو وه موت کو بلانے لگے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
وہ موت کو پکارے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
تو عنقریب وہ بڑی ہلاکت کو پکارے گا ۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

12
وَيَصْلَى سَعِيرًا (12)
ويصلى سعيرا۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور بھڑکتی ہوئی جہنم میں داخل ہوگا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور وہ دوزخ میں داخل ہو گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور بھڑکتی آگ میں داخل ہوگا ۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

13
إِنَّهُ كَانَ فِي أَهْلِهِ مَسْرُورًا (13)
إنه كان في أهله مسرورا۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
یہ شخص اپنے متعلقین میں (دنیا میں) خوش تھا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
یہ اپنے اہل (و عیال) میں مست رہتا تھا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
بلاشبہ وہ اپنے گھر والوں میں خوش تھا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

14
إِنَّهُ ظَنَّ أَنْ لَنْ يَحُورَ (14)
إنه ظن أن لن يحور۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اس کا خیال تھا کہ اللہ کی طرف لوٹ کر ہی نہ جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور خیال کرتا تھا کہ (خدا کی طرف) پھر کر نہ جائے گا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
یقینا اس نے سمجھا تھا کہ وہ کبھی ( اپنے رب کی طرف) واپس نہیں لوٹے گا ۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

15
بَلَى إِنَّ رَبَّهُ كَانَ بِهِ بَصِيرًا (15)
بلى إن ربه كان به بصيرا۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
کیوں نہیں، حاﻻنکہ اس کا رب اسے بخوبی دیکھ رہا تھا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
ہاں ہاں۔ اس کا پروردگار اس کو دیکھ رہا تھا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
کیوں نہیں ! یقینا اس کا رب اسے خوب دیکھنے والا تھا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

16
فَلَا أُقْسِمُ بِالشَّفَقِ (16)
فلا أقسم بالشفق۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
مجھے شفق کی قسم! اور رات کی!۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
ہمیں شام کی سرخی کی قسم۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
پس نہیں، میں شفق کی قسم کھاتا ہوں!
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
تفسیر آیت نمبر 16,17,18,19,20

17
وَاللَّيْلِ وَمَا وَسَقَ (17)
والليل وما وسق۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور اس کی جمع کرده چیزوں کی قسم۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور رات کی اور جن چیزوں کو وہ اکٹھا کر لیتی ہے ان کی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور رات کی اور اس چیز کی جسے وہ جمع کرتی ہے!
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

18
وَالْقَمَرِ إِذَا اتَّسَقَ (18)
والقمر إذا اتسق۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور چاند کی جب کہ وه کامل ہو جاتا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور چاند کی جب کامل ہو جائے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور چاند کی، جب وہ پورا ہوتا ہے !
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

19
لَتَرْكَبُنَّ طَبَقًا عَنْ طَبَقٍ (19)
لتركبن طبقا عن طبق۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
یقیناً تم ایک حالت سے دوسری حالت پر پہنچو گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
کہ تم درجہ بدرجہ (رتبہٴ اعلیٰ پر) چڑھو گے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
کہ تم ضرور ہی ایک حالت سے دوسری حالت کو چڑھتے جاؤ گے ۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

20
فَمَا لَهُمْ لَا يُؤْمِنُونَ (20)
فما لهم لا يؤمنون۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
انہیں کیا ہو گیا کہ ایمان نہیں ﻻتے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
تو ان لوگوں کو کیا ہوا ہے کہ ایمان نہیں لاتے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
تو انھیں کیا ہے کہ وہ ایمان نہیں لاتے ۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

21
وَإِذَا قُرِئَ عَلَيْهِمُ الْقُرْآنُ لَا يَسْجُدُونَ (21)
وإذا قرئ عليهم القرآن لا يسجدون۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور جب ان کے پاس قرآن پڑھا جاتا ہے تو سجده نہیں کرتے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور جب ان کے سامنے قرآن پڑھا جاتا ہے تو سجدہ نہیں کرتے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور جب ان کے سامنے قرآن پڑھا جاتا ہے تو وہ سجدہ نہیں کرتے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
تفسیر آیت نمبر 21,22,23,24,25

22
بَلِ الَّذِينَ كَفَرُوا يُكَذِّبُونَ (22)
بل الذين كفروا يكذبون۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
بلکہ جنہوں نے کفر کیا وه جھٹلا رہے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
بلکہ کافر جھٹلاتے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
بلکہ وہ لوگ جنھوں نے کفر کیا جھٹلاتے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

23
وَاللَّهُ أَعْلَمُ بِمَا يُوعُونَ (23)
والله أعلم بما يوعون۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
اور اللہ تعالیٰ خوب جانتا ہے جو کچھ یہ دلوں میں رکھتے ہیں۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
اور خدا ان باتوں کو جو یہ اپنے دلوں میں چھپاتے ہیں خوب جانتا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
اور اللہ زیادہ جاننے والا ہے جو کچھ وہ جمع کررہے ہیں ۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

24
فَبَشِّرْهُمْ بِعَذَابٍ أَلِيمٍ (24)
فبشرهم بعذاب أليم۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
انہیں المناک عذابوں کی خوشخبری سنا دو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
تو ان کو دکھ دینے والے عذاب کی خبر سنا دو۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
پس انھیں ایک دردناک عذاب کی خوش خبری دے دے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔

25
إِلَّا الَّذِينَ آمَنُوا وَعَمِلُوا الصَّالِحَاتِ لَهُمْ أَجْرٌ غَيْرُ مَمْنُونٍ (25)
إلا الذين آمنوا وعملوا الصالحات لهم أجر غير ممنون۔
[اردو ترجمہ محمد جونا گڑھی]
ہاں ایمان والوں اور نیک اعمال والوں کو بے شمار اور نہ ختم ہونے واﻻ اجر ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ فتح محمد جالندھری]
ہاں جو لوگ ایمان لائے اور نیک عمل کرتے رہے ان کے لیے بےانتہا اجر ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
[اردو ترجمہ عبدالسلام بن محمد]
مگر وہ لوگ جو ایمان لائے اور انھوں نے نیک عمل کیے، ان کے لیے نہ ختم ہونے والا اجر ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تفسیر ابن کثیر
اس آیت کی تفسیر پچھلی آیت کے ساتھ کی گئی ہے۔